Dil♡ Ka Haal, (دل کا حال)

ایک درویش دوسرے درویش سے ملا تو کہنے لگا” میں آپ سے اللہ کے لیے محبت کرتا ہوں” دوسرے نے کہا،” اگر آپ میرے دل کا وہ اصلی حال جان لیں جو میں جانتا ہوں تو مجھ سے بغض کرنے لگیں گے”پہلے نے کہا” آپ کی اندرونی اصلی حالت کا اگر مجھے علم بھی ہو جائے تو جو میں اپنے بارے میں جانتا ہوں وہ آپ کے بغض سے اعراض کرنے کے لیے کافی ہوگا( کہ میری حالت بہر حال آپ سے بدتر ہے )

Ek Darvesh Dusre Darvesh Se Mila To Kehne Laga” Mai Aapse Allah Ke Liye Muhabbat Karta Hu”Dusre Ne Kaha” Agar Aap Mere Dil Ka Wo Asli Haal Jan Le Jo Mai Janta Hu To Mujhse Bughz Karne Lagenge”Pehle Ne Kaha” Aapki Anduruni Asli Halat Ka Agar Mujhe ilm Bhi Ho Jaye To Jo Mai Apne Bare Me Janta Hu Wo Aap Ke Bughz Se eraaz Karne Ke Liye Kafi Hoga (Ke Meri Halat Beher Hal Aap Se Bad’Tar Hai)

﴾ ۲ ــ ص۳۶۷ ﴿

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s